کالی روشنی

Poet: عدن ڈار
By: Adan Dar, Lahore

پیار ڈھونڈنے کو جو میں نکلا
انسان بھی ڈھونڈنے پر نہ ملا

کیوں نہ کیا کوئ انسان پیدا
کیا جب میں نےخدا سے گلا

کیا ہر ایک کو پیدا انسان ہی
سوچنے کو ایک ذہن بھی دیا

ہے تیری ہی پھیلائ ہوئ یہ کالی روشنی
جواب اس کی طرف سے یہ ملا

بھٹکے ہوۓ قیام خانے کے ہم بن چکے مقیم
یا رب دکھا دے ہمیں صراط مستقیم

اس کالی روشنی میں ہو چکے ہیں روشن ہم
اسی لیے گھیرے ہوئے ہیں ہم کو غم

نہ ڈال ہماری طاقت سے زیادہ ہم پر بوجھ
بہت بھاری ہے تیری ناراضی کا بوجھ

آۓ راہ حق پر موت ہمیں یا رب
شہادت کی موت ہم کو دلا

Rate it:
03 May, 2020

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Adan Dar
Visit Other Poetries by Adan Dar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City