کوئی ظالِم کوئی فاسق کوئی بدکار نہیں رہا

Poet: Shehzad "Saahil" Sadaruddin
By: Saahil Shehzad, Houston

کوئی ظالِم کوئی فاسق کوئی بدکار نہیں رہا
ذوالفقار کے مقابل لشکرِ کفار نہیں رہا

علیؐ کی بہادوری، کيا لفظوں ميں ہو بيان
نادِ علیؐ کے بعد ، بابِ خيبر نہيں رہا

میرے آقاﷺ کو اللہ نے ، کوثر سے نوازا ہے
محبوبِ خدا کو ابتر کہنے والا نہیں رہا

اب بھی آتی ہے مہک ، بادِ کربلا سے حُسین کی
حسنین کے دوشمنوں کا ، کوئی وارث نہیں رہا

ٹيک آیا جو اپنی جبین ، کعبے کی چوکھٹ پر
کتنا بھی ہو غافل ، گنہگار نہیں رہا

یوں تو آئے محشر میں ایک سے ایک سکندر
رُتبہ غلامِ علی کے برابر نہیں رہا

ڈوبی ہوئی تھی دنیا جہالت کی ظلمت میں
ظہورِ آقاﷺ کے بعد عالم میں اندھیرا نہیں رہا

اللہ نے حُکم دیا پونچھا دیجیئے رسول
بعد 'منْ کنْتُ موْلا' پیغامِ رسالت نہیں رہا

جب سے ڈوبا ہے ساّحؔل ، محمد کے سمندر میں
ڈرِ دنیا نہیں رہا ، خوفِ حشر نہیں رہا

 

Rate it:
31 Jan, 2020

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Saahil Shehzad
Visit 8 Other Poetries by Saahil Shehzad »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Zbrdast

By: Bushra Babar, islamabad on Apr, 11 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City