ناموس رسالت

Poet: محمد کامران پاشا By: Muhammad Kamran Pasha, Sydney

نبی کی شان میں گستاخی کرتا ہے
تو زندہ کہاں ہے ابھی مرتا ہے
تجھے قتل کریں گے سر بازار
اس پر جشن منائیں گے ہزار بار

یہ نہ ہو سکا ہم سے اگر
یہ زندگی اک بوجھ سی ہے
جتنی بھی ہو اک روگ سی ہے
آخرت میں بھی سوگ سی ہے

تو کیا سمجھا ہے کہ ہم میں جان نہیں
مسلمانوں کی اب کوئی شان نہیں
بات نبی کی آئے تو دیکھ ان کو
غازی علم دین بننے کو تیار ہیں یہی

وارننگ ہے تیرے لیے اب یہی
گستاخی کا تو سوچے گا اگر کبھی
تیرے ہاتھ پاؤں توڑ دیں گے
تیری سانس کو بھی روک دیں گے

Rate it:
Views: 575
02 Mar, 2021