اُسی نے دشمنوں کو با خبر رکھا ہوا ہے

Poet: تہذیب حافیBy: Adnan, Rawalpindi

اُسی نے دشمنوں کو با خبر رکھا ہوا ہے
‏یہ تونےجس کواپناکہہ کہ گھررکھاہواہے

مرےکاندھےپہ سررہنےنہیں دےگاکسی دن
‏یہی جس نےمرےکاندھےپہ سررکھاہواہے‏

یہ کس نے دی ہے مجھکو ہار جانے پر تسلی
یہ کس نے ہاتھ میرے ہاتھ پر رکھا ہوا ہے

مسلسل رہ نہیں سکتا کسی ایک دل میں حافی
غریبوں کے نصیبوں میں سفر رکھا ہوا ہے

Rate it:
Views: 1322
30 Oct, 2021