نگاہ_ شوق ہو عشق کا سرمہ ہو

Poet: Mubeen Nisar
By: Mubeen Nisar, Islamabad

نگاہ_ شوق ہو عشق کا سرمہ ہو
تقاضاء دید ہو پھر طور کا جلنا ہو

عصاء ھدایت ہو بحر کا سینہ ہو
پھر بپھری ہوئی لہروں پہ چلنا ہو

دل صدا دے دل ہی جواب پائے
کیفیت_جذب ہو جام_دل کا چھلکنا ہو

لطف و کرم کی وہ بہار_ پر کیف ہو
چاند کا کٹورہ نور کا بہتا جھرنا ہو

مکتب_دل سے روشنی پھوٹنے لگے
رب ذدنی علما" اور سینے کا چمکنا ہو"

آنسوؤں کی جھڑی لگے کہ اک اک قطرہ
موتی ہو ! اور شان_کریمی کا چننا ہو

Rate it:
24 Nov, 2019

More Sufi Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: mubeen nisar
Business, Physics & literature... View More
Visit 240 Other Poetries by mubeen nisar »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City