نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی

Poet: Bushra Babar
By: Bushra Babar, islamabad

 نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ ذکرِسیدالانبیاء کرئے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس سےچاہے ذکر کرائے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ بلندیِ مصطفٰی کو پہنچے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے بلند کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ عرشِ بریں کو جا پہنچے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے معراج کرائے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ بشریت میں نورانیت کو پہنچے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے نور کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ اٹھا سکےجو قرآں کا ذمّہ
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس پہ چاہے نُزُول کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ محبت میں اِس مقام کو پہنچے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے محبوب کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ حدودِلا مکاں کو پہنچے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے پار کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ ساتھ محمدِمجتبٰی کے چلتا
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے بُو بکر کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ غلامیِ محمدی میں آئے
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے بلال کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ دور رہ کے بھی قریب تر ہو
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے اویس کر دے

نہیں ہے قابل کوئی بشر بھی
کہ ترستاہو جس کے لب کو پانی
یہ سب رب کا کرم ہے دیکھو
کہ جس کو چاہے حُسین کر دے
 

Rate it:
22 Apr, 2020

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Bushra Babar
Visit 70 Other Poetries by Bushra Babar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City