Add Poetry

علم نے مجھ سے کہا عشق ہے ديوانہ پن

Poet: ارحام By: arham, Karachi

علم نے مجھ سے کہا عشق ہے ديوانہ پن
عشق نے مجھ سے کہا علم ہے تخمين و ظن

بندہ تخمين و ظن! کرم کتابي نہ بن
عشق سراپا حضور، علم سراپا حجاب!

عشق کي گرمي سے ہے معرکہء کائنات
علم مقام صفات، عشق تماشائے ذات

عشق سکون و ثبات، عشق حيات و ممات
علم ہے پيدا سوال، عشق ہے پنہاں جواب!

عشق کے ہيں معجزات سلطنت و فقر و ديں
عشق کے ادني غلام صاحب تاج و نگيں

عشق مکان و مکيں، عشق زمان و زميں
عشق سراپا يقيں، اور يقيں فتح باب!

شرع محبت ميں ہے عشرت منزل حرام
شورش طوفاں حلال، لذت ساحل حرام

عشق پہ بجلي حلال، عشق پہ حاصل حرام
علم ہے ابن الکتاب، عشق ہے ام الکتاب!

Rate it:
Views: 443
06 Nov, 2023
Related Tags on Allama Iqbal Poetry
Load More Tags
More Allama Iqbal Poetry
Popular Poetries
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets