Add Poetry

وہ شخص کبھی جس نے مرا گھر نہیں دیکھا

Poet: Dilawar Figar By: zeeshan, khi
Woh Shakhs Kabhi Jis Ne Mera Ghar Nahi Dekha

وہ شخص کبھی جس نے مرا گھر نہیں دیکھا
اس شخص کو میں نے کبھی گھر پر نہیں دیکھا

کیا دیکھوگے حال دل برباد کہ تم نے
کرفیو میں مرے شہر کا منظر نہیں دیکھا

جاں دینے کو پہنچے تھے سبھی تیری گلی میں
بھاگے تو کسی نے بھی پلٹ کر نہیں دیکھا

داڑھی ترے چہرے پہ نہیں ہے تو عجب کیا
یاروں نے ترے پیٹ کے اندر نہیں دیکھا

تفریح یہ ہوتی ہے کہ ہم سیر کی خاطر
ساحل پہ گئے اور سمندر نہیں دیکھا

فٹ پاتھ پہ بھی اب نظر آتے ہیں کمشنر
کیا تم نے کوئی اوتھ کمشنر نہیں دیکھا

افسوس کہ اک شخص کو دل دینے سے پہلے
مٹکے کی طرح ٹھونک بجا کر نہیں دیکھا

Rate it:
Views: 1564
09 Jan, 2017
More Dilawar Figar Poetry
Popular Poetries
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets