بس یہی گزرتالمحہ ہی زندگی ھے

Poet: ayesh
By: ayesh, peshawar

ان جھیل سی گہری شفاف
پریشان آنکھوں میں
گزرے موسموں کی دھول لئے
بیتےوقت کےمزارپر
یادوں کےدیپ جلائے
کسی گہری سوچ میں ڈوبی
آنےوالےکل کےخوابوں میں کھوئی
معصوم سی بھولی بھالی لڑکی
گزرےوقت کے مزارپر
آنسوبہانےسے
کسی سراب کےدھوکےمیں
کھوکربھٹکنےسے
بہت سے خواب پرونےسے
بہتر ھے
زندگی کے اس گزرتےلمحےکوکہ
جسمیں تم بھیٹی سوچ رہی ہو
جوہاتھوں سےپھسلتی ریت کی مانند
پھسلتا جارہاھے
اپنی مھٹی میں قیدکرکے
وقت کی ڈوری کوتھام کر
بس چلتی رہوکہ
یہی گزرتالمحہ اگرگزراتو
بیتےوقت کی صورت
ڈھل جائیگایہ بھی
پلٹ کرکبھی نہ آئیگا،اورتم
بیھٹی سوچتی رہ جاؤگی
آنکھیں تیری بس دیکھتی رہ جائیگی
کہ یہی اک گزرتالمحہ ہی زندگی کاحاصل ھے
بس یہی گزرتالمحہ ہی زندگی ھے
 

Rate it:
24 Dec, 2015

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: ayesh
Visit 46 Other Poetries by ayesh »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City