جو کہا تھا کر دکھایا تم نے

Poet:
By: Shazia Fatima, Karachi

جو کہا تھا کر دکھایا تم نے
اپنا ہر وعدہ نبھایا تم نے
ظلمت کے گھور اندھیروں میں
امید کا اک دیپ جلایا تم نے
سب ہی وسوسے دم توڑ گَے
کچھ ایسا یقیں دلایا تم نے
سوِئی ہوِئِی اس قوم کو
خواب غفلت سے جگایا تم نے
کیوں نہ اہل وطن کو تجھ پہ ناز ہو
وقار ان کا عالم میں بڑھایا تم نے
کس شان سے سر زمین غیر پہ
اسلام کا پرچم لہرایا تم نے
خدا کرے تیرے عزم کو ہمت عطا
ناموس وطن کا جو بیڑہ اٹھایا تم نے
کہاں بھٹکتے تھے ہم تنہا و مضطرب
پھر سے ہمیں اک قوم بنایا تم نے
دعا ہے رب سے تیرا نام بلند رہے سدا
لہو مسلم کو بھر گرمایا تم نے
کشمیر کے درد کو آواز ملی تم سے
اپنا فرض کیا خوب نبھایا تم نے
اے رہبرہر آفت سے امان ہو تجھ کو
دشمن کو خوب آئینہ دکھایا تم نے

Rate it:
29 Sep, 2019

More Political Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shazia Fatima
Visit Other Poetries by Shazia Fatima »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City