حسین ابنِ علی

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi, Karachi

نام نانا سے یہ ملا ہے مجھے
میرے اللہ کا آسرا ہے مجھے

لے کر آیا ہوں اپنے بچوں کو
کوئی مقتل بلا رہا ہے مجھے

اب یہیں پر لگا لو خیموں کو
دیکھو کربل پکارتا ہے مجھے

دین نانا کا میں بچاؤں گا
اپنے بابا سا حوصلہ ہے مجھے

حُر بھی لشکر سے پھر نکلتا ہے
حق پہ لڑتے جو دیکھتا ہے مجھے

بادشاہت کی کیا ضرورت ہے
فاطمہ زہرہ کی دعا ہے مجھے

تاقیامت کہے گا کربل یہ
ایک سجدہ سنوارتا ہے مجھے

Rate it:
03 Sep, 2019

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 208 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City