سوچتے تھے بعد ترک تعلق کیاکریں گے

Poet: Mehar Ali
By: Mehar Ali, Sahiwal

سوچتے تھے بعد ترک تعلق کیاکریں گے
اب جانے کہ بات بات پہ رویا کریں گے

ہم تو ماضی ہی سے جانتے تھے یہ بات
پتھر کے خدا کیا ہم سے وفا کریں گے

قبل اس کے کہ محبت کرتے سوچا نہیں
اپنی رویے سے ہم کسی کو خفا کریں گے

دنیا کے چند حقائق سے ہم بھی ہیں آشنا
افسوس آپ یہ جان کر کیا کریں گے

ہے آپ کو تمنا اگر ہم نہ رہیں تو کہیے
ہم اآپکو کہیں بھی نہ دکھا کریں گے

Rate it:
23 Sep, 2020

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mehar Ali
Visit Other Poetries by Mehar Ali »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

(اب جانے کہ بات بات پہ رویا کریں گے)
اب جانا کہ بات بات پہ رویا کریں گے

By: Uzma, Lahore on Sep, 28 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City