موج حسرت کے بھی کرنا نہ حوالے مجھ کو

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, منیلا

بن کے دریا جو سمندر میں اچھالے مجھ کو
موج حسرت کے بھی کرنا نہ حوالے مجھ کو

درد کے یاس ہے،زخموں کی قبا ہے مجھ کو
کیسے دیکھیں گے یہاں دیکھنے والے مجھ کو

میں بھی رہ لوں گی تری آس کی چوکھٹ پر،تو
اپنے ایمان کا پیمانہ بنا لے مجھ کو

ہوکے رہ جائیں گے اس دل کے یہ ارمان قتل
اپنی دنیا کے رواجوں سے بچا لے مجھ کو

پھر وہ نفرت کے اندھیروں میں مجھے چھوڑ گیا
جس نے بخشے تھے محبت کے اجالے مجھ کو

میری آنکھوں میں کوئی راستہ ، منزل ہی نہیں
دل کے رستے میں مری ضان سجا لے مجھ کو

کس نے دیکھی ہے محبت کی حسین رات یہاں
شام کے سائے میں اے وشمہ چھپالے مجھ کو

Rate it:
18 Nov, 2020

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: وشمہ خان وشمہ
I am honest loyal.. View More
Visit 4688 Other Poetries by وشمہ خان وشمہ »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City