ناشناس

Poet: مرزا عبدالعلیم بیگ
By: Mirza Abdul Aleem Baig, Hefei, Anhui, China

رات سنسان ہے
بوجھل ہیں فضا کی سانسیں
آنکھوں میں چبھتی ہے تاروں کی چمک
ذہن سلگتا ہے تنہائی میں
روح پر چھاگئے ہیں غموں کے سائے
دل بضد ہے کہ تم آؤ تسلی دینے
میری کوشش ہے کہ کمبخت کو نیند آئے
تم میرے پاس نہیں پھر بھی
سحر ہونے تک
تیری ہر سانس میرے جسم کو چھو کر گزرے
تیری خوشبو سے معطر‘ لمحہ لمحہ میرا گزرے
تیرے دیدار کی شبنم‘ قطرہ قطرہ مجھ پر برسے
 

Rate it:
14 Oct, 2020

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mirza Abdul Aleem Baig
Visit Other Poetries by Mirza Abdul Aleem Baig »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City