کہاں ملے گی مثال میری ستم گری کی

Poet: محسن نقویBy: Hassan, Lahore

کہاں ملے گی مثال میری ستم گری کی
کہ میں گلابوں کے زخم کانٹوں سے سی رہا ہوں

Rate it:
Views: 352
30 Jul, 2021