تھک جاؤ گی

Poet: محسن نقویBy: Asher, Lahore

پاگل آنکھوں والی لڑکی
اتنے مہنگے خواب نہ دیکھو
تھک جاؤ گی

کانچ سے نازک خواب تمہارے
ٹوٹ گئے تو
پچھتاؤ گی

سوچ کا سارا اجلا کندن
ضبط کی راکھ میں گھل جائے گا
کچے پکے رشتوں کی خوشبو کا ریشم
کھل جائے گا

تم کیا جانو
خواب سفر کی دھوپ کے تیشے
خواب ادھوری رات کا دوزخ
خواب خیالوں کا پچھتاوا
خوابوں کی منزل رسوائی
خوابوں کا حاصل تنہائی

تم کیا جانو
مہنگے خواب خریدنا ہوں تو
آنکھیں بیچنا پڑتی ہیں یا
رشتے بھولنا پڑتے ہیں
اندیشوں کی ریت نہ پھانکو

پیاس کی اوٹ سراب نہ دیکھو
اتنے مہنگے خواب نہ دیکھو

تھک جاؤ گی

Rate it:
Views: 991
28 Sep, 2021