ہم کبھی خاص و عام تک جائیں

Poet: وشمہ خان وشمہ By: وشمہ خان وشمہ, منیلا

ہم کبھی خاص و عام تک جائیں
صبح سے نکلیں تو شام تک جائیں

کس قدر رونقیں تھیں میلے میں
وہ بھی اب اختتام تک جائیں

میری وحشت کو روند کر اک دن
میرے دل کے مقام تک جائیں

ان سے ملنے کی آرزو ہے کہاں
صرف الفت میں کام تک جائیں

یہ تکلف کہاں ضروری ہے
ربط میں احترام تک جائیں

نام لیتا نہیں ہے جن کا کوئی
کیوں وہ میرے ہی نام تک جائیں

ماہ و انجم کو چھو سکیں وشمہ
کاش ہم بھی دوام تک جائیں

Rate it:
Views: 75
28 Jun, 2022
Related Tags on Sad Poetry
Load More Tags
More Sad Poetry
Popular Poetries
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets