اگر خلاف ہیں ہونے دو جان تھوڑی ہے

Poet: راحت اندوری By: ساجد ہمید, Rawalpindi

اگر خلاف ہیں، ہونے دو، جان تھوڑی ہے
یہ سب دھواں ہے، کوئی آسمان تھوڑی ہے

لگے گی آگ تو آئیں گے گھر کئی زد میں
یہاں پہ صرف ہمارا مکان تھوڑی ہے

میں جانتا ہوں کہ دشمن بھی کم نہیں لیکن
ہماری طرح ہتھیلی پہ جان تھوڑی ہے

ہمارے منہ سے جو نکلے وہی صداقت ہے
ہمارے منہ میں تمہاری زبان تھوڑی ہے

جو آج صاحبِ مسند ہیں، کل نہیں ہوں گے
کرائے دار ہیں، ذاتی مکان تھوڑی ہے
 

Rate it:
Views: 662
12 Apr, 2022
Related Tags
Load More Tags
video
More Rahat Indori Poetry
Popular Poetries
Shayari
Teer Par Teer Lagao Tumhen Dar Kis Ka Hai
Poetry in Urdu Text
Aaina Dekh Kar Tasalli Hui
Shayari
Jaun Elia Best Lines
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets