خسرہ اور روبیلا سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکوں نے 3 بچوں کی جان لے لی

image

 بھارت میں خسرہ اور روبیلا سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکوں نے 3 بچوں کی جان لے لی۔

بھارتی ریاست کرناٹکا کے ایک سرکاری اسپتال میں نرس کی جانب سے 3 بچوں کو خسرہ اور روبیلا سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکے لگائے گئے تاہم تینوں بچے کچھ ہی گھنٹوں بعد جان کی بازی ہارگئے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ بچوں کی ہلاکت کا واقعہ اگنوادی سینٹر میں پیش آیا جہاں بچوں کو خسرہ اور روبیلا کے انجیکشن لگانے والی نرس نے بغیر کسی حفاظت اور جراثیم کش اقدامات کے بغیر بچوں کو ٹیکے لگائے جس سے ان کی طبیعت خراب ہونا شروع ہوئی۔

بچوں کی صحت کی دیکھ بھال کرنے والے ادارے کے سربراہ ڈاکٹر متاثرہ بچوں میں ایک بچی کی عمر 10 ماہ تھی اور ٹیکا لگنے کے اگلے ہی گھنٹے اس کی طبیعت خراب ہونا شروع ہوئی اور اگلے چند گھنٹوں میں وہ اپنی جان گنوا بیٹھی۔

انہوں نے بچوں کی موت کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہیلتھ ورکر کی کوتاہی کی وجہ سے یہ اموات ہوئیں جب کہ دیگر دو بچوں کی عمریں 18 ماہ اور 2 سال تھی۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ اسی روز مجموعی طور پر 17 بچوں کو خسرہ اور روبیلا سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکے لگائے گئے جن میں 3 بچوں کی اموات ہوئی۔

بچوں کی صحت کے سربراہ نے مزید کہا کہ نرس کی غفلت کے باعث بچوں کی اموات کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں اور نرس کو معطل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے 15 ماہ سے کم عمر بچوں کو خسرہ اور روبیلا سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکوں کی پہلی خوراک دی جاتی ہے اور 15 ماہ سے بڑے بچوں کو دوسری خوراک دی جاتی ہے۔

Square Adsence 300X250


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
عالمی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.