ٹک ٹاک کا تخلیق کاروں کیلیے پیڈ سبسکرپشنز پر غور

image

فائل فوٹو

سوشل میڈیا ایپ ٹک ٹاک نے تصدیق کی ہے کہ وہ پیڈ سبسکرپشنز کے لیے ٹیسٹنگ سپورٹ کر رہا ہے، جس سے شارٹ فارم ویڈیو پلیٹ فارم پر تخلیق کاروں کو اپنے مواد کی قیمت وصول کرنے کا موقع ملے گا۔

ٹینکالوجی کی ویب سائٹ کے مطابق اسکی اطلاع سب سے پہلے ’دی انفارمیشن‘ کی طرف سے دی گئی تھی، کمپنی نے اس بارے میں تفصیلات شیئر نہیں کیں کہ یہ تخلیق کاروں کو کب میسر ہوگی، کتنے تخلیق کار فی الحال اس کی جانچ کر رہے ہیں یا فیس کا طریقہ کار کیا ہوگا۔

کمپنی کے ترجمان زچری کِزر نے دی ورج کو ایک ای میل میں بتایا کہ ’سبسکرپشنز ایک تصور تھا جس کی فی الحال جانچ کی جا رہی ہے اور ہم ہمیشہ اپنی کمیونٹی میں بہتری لانے اور ٹک ٹاک کو تقویت دینے کے نئے طریقوں کے بارے میں سوچتے رہتے ہیں‘۔

اگر پیڈ سبسکرپشنز کو متعارف کروایا جاتا ہے تو یہ ٹک ٹاک کی جانب سے اپنے تخلیق کاروں کے لیے بڑی مدد ہوگی جس کے ذریعے اپنے مواد کو مونیٹائز کروا سکیں گے۔

ٹِک ٹاک کا پیڈ سبسکرائبرز کا ٹیسٹ انسٹاگرام کے اس اعلان کی پیروی کرتا ہے کہ وہ بھی محدود تخلیق کاروں اور انفلیونسرز کے ساتھ پیڈ سبسکرپشنز کا ٹیسٹ شروع کر رہا ہے۔

تخلیق کاروں کے خصوصی مواد (جس میں اسٹوریز اور لائیو ویڈیوز شامل ہیں) تک رسائی کے لیے سبسکرائبرز ماہانہ فیس ادا کریں گے۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.