پلاسٹک کے کپ میں چائے یا کافی پینے والے ہوجائیں ہوشیار

image
کافی کے ڈِسپوز ایبل کپ کو پہلے ہی اس کے باریک پلاسٹک کی پرت کی وجہ سے ری سائیکل نہ ہو سکنے کے سبب ماحولیات کے لیے ناسور جانا جاتا ہے۔

اب ایک تحقیق میں انکشاف کیا گیا ہے کہ گرم مشروبات کے برتن ہمارے مشروب میں کھربوں انتہائی باریک پلاسٹک کے ذرّات چھوڑ دیتا ہے۔

نیشنل انسٹیٹیوٹ آف اسٹینڈرڈز اینڈ ٹیکنالوجی کے محققین نے گرم مشروبات کے لیے ایک بار استعمال ہونے والے کپس کا تجزیہ کیا جس پر کم کثافت والے پولی اِیتھیلین کی پرت چڑھی ہوئی تھی۔ یہ ایک نرم لچکدار پلاسٹک فلم ہوتی ہے جو عموماً واٹرپروف لائنر کے طور پر استعمال کی جاتی ہے۔

محققین کو معلوم ہوا کہ جب ان کپس کو 100 ڈگری سیلسیئس کے پانی میں رکھا گیا تو ان کپس نے فی لیٹر پانی میں کھربوں نینو ذرات خارج کیے۔

نیشنل اِنسٹیٹیوٹ آف اسٹینڈرڈ اینڈ ٹیکنالوجی کے کیمیادان کرسٹوفر زینگمئیسٹر کا کہنا تھا کہ جو بنیادی مشاہدہ ہے وہ یہ ہے کہ ہم جہاں بھی دیکھتے ہیں اس میں پلاسٹک کے ذرات دِکھتے ہیں۔ فی لیٹر کھربوں ذرات ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم یہ نہیں جانتے کہ اگر اس کے لوگوں یا جانوروں کی صحت پر کوئی برے اثرات ہیں۔ ہم صرف اس بات پر پُر اعتماد ہیں کہ وہ یہاں ہیں۔

نینوپلاسٹک کا تجزیہ کرنے کے لیے زینگمئیسٹر اور ان کی ٹیم نے کپ میں پانی لیا اور باہر نمی کا چھڑکاؤ کیا اور کپ کو سوکھنے کے لیے چھوڑ دیا جس کے نتیجے میں نینو پارٹیکلز باقی محلول میں خارج ہوتے رہے۔

مزید پڑھیں40 mins agoمریخ پر سورج گرہن کا دلفریب منظر

ہم میں سے بہت سے لوگ دنیا میں سورج گرہن کا منظر...

1 hour agoسائنس دانوں نے اِنڈیانا جونز کا دعویٰ درست ثابت کردیا

ایک نئی تحیقق نے 2008 کی ہالی وڈ فلم اِنڈیانا جونز کے...

6 hours agoہوا کے دوش پر ڈیڑھ کلوواٹ بجلی ایک کلومیٹر دور بھیجنے کا ناقابلِ یقین تجربہ

ہم صدیوں سے ہوا کے دوش پر بجلی آگے پہنچانے کی باتیں...

7 hours agoگھر کے اندر ہوا کا ماحول بتانے والی پیلی چڑیا

کنیری ایک چہچہانے والی خوبصورت پیلی چڑیا کو کہتے ہیں جو یورپ...

21 hours agoگوگل پالیسیوں کی وجہ سے ٹروکالر کے اہم فیچر پر پابندی

اینڈروئیڈ فون کی مشہورایپلی کیشن ٹروکالرنے اپنے کال ریکارڈنگ فیچرکوختم کردیا ہے۔...

23 hours agoریئل می کا طاقت ور پروسیسر کے ساتھ کم قیمت فون متعارف

چینی موبائل ساز ادارے ریئل می نے اسنیپ ڈریگن کے طاقت ورچپ...

-->

تازہ ترین نیوز پڑہنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کریں بول نیوزایپ

General Rectangle – 300×250

News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.