کیا انورٹراے سی عام اے سی کی نسبت بجلی کم خرچ کرتے ہیں؟

image
ماحولیاتی آلودگی اور موسمی تغیرات کی بنا پرہرموسم کی شدت میں اضافہ ہورہا ہے چاہے وہ سردیاں ہوں یا گرمیاں۔ یہ بات تو سب ہی جانتے ہیں کہ موسمی تغیرات کی وجہ سے زمین کی حدت میں اضافہ ہوتا جارہا ہے گرمیوں کا موسم نہ صرف طویل بلکہ گرم تر ہورہا ہے یہی وجہ اب گھروں میں گرمی سے بچنے کے لئے  پنکھوں پر انحصار نہیں کیا جاسکتا اور اے سی ناگزیرہوگیا ہے۔

اے سی کو لگانا اتنا مشکل نہیں جتنا اس کا خرچ برداشت کرنا ہے۔ لیکن جب کسی شے کی ضرورت محسوس کی جاتی تو اس کا حل بھی تلاش کرلیاجاتا ہے اسی طرح عام اے سی کے مقابلے میں انورٹر اے سی اس کا بہترین متبادل ہے جو بجلی کی بچت کے ساتھ کم وقت میں آرام اور سہولت فراہم کرتا ہے۔

یہاں یہ بات جاننا نہایت ضروری ہے کہ انورٹراے سے کی ٹیکنالوجی کم بجلی خرچ کئے کس طرح کام کرتی ہے؟

 لوگوں کی اکثریت ہم عام طور پر کمرے کا درجہء حرارت اپنی ضرورت کے مطابق سیٹ کرتی ہیں  (مثلاً ہم تھرموسٹیٹ کو 26 ڈگری سینٹی گریڈ پر رکھتے ہیں)۔ اس درجہ حرارت کو حاصل کرنے کے لیے کمپریسر کو ایک خاص رفتار سے چلنا ہوتا ہے جو کہ اس کی سب سے زیادہ رفتار ہوتی ہے، جس کے باعث بجلی بھی سب سے زیادہ خرچ ہوتی ہے۔

جب درجہ حرارت مطلوبہ سطح پر پہنچ جاتا ہے تو تھرموسٹیٹ کمپریسر کو ٹرپ کر دیتا ہے اور اس کا بلوور کافی سست رفتاری سے چلنے لگتا ہے۔ تاہم کمرے میں ہوا لیک ہونے کے راستے ہوں (جہاں سے گرم ہوا اندر آتی ہو) تو کمرے کا درجہ حرارت پھر بڑھنے لگتا ہے۔ نتیجتاً تھرموسٹیٹ کمپریسر کو پھر سے چلنے اور ہمارے مطلوبہ درجہ حرارت کو بحال کرنے کی ہدایات جاری کر دیتا ہے۔

کمرے کا درجہ حرارت کم ہونے پرکمپریسر کا ٹرپ ہوجانا فائدہ مند ہوتا ہے کیونکہ جب کمپریسر نہیں چلارہاہوگا تو بجلی بھی کم استعمال ہوگی۔ مگرمسئلہ یہ ہے کہ کمپریسر کی بار بار ٹرپنگ اور دوبارہ اسٹارٹ ہونے کی وجہ سے زیادہ بجلی خرچ ہوتی ہے، کیونکہ جب یہ اپنے نارمل موڈ پر چل رہے ہوتے ہیں اس کے مقابلے میں اسٹارٹ ہونے کے لیے زیادہ بجلی درکار ہوتی ہے۔

انورٹر ٹیکنالوجی نے اس چیز کو بدل کر رکھ دیا ہے، کمپریسر کے چلنے کی مختلف رفتار سیٹ کرنے والی ڈیوائس کے ذریعے کنٹرول کیا جاتا ہے جو کہ بجلی کے ایک ڈی سی ذریعے سے چلتی ہے۔

آسان الفاظ میں اس کا مطلب یہ ہے کہ کمرے کا درجہ حرارت نوٹ کرتے ہوئے کمپریسر کو چلانے والی موٹر کی رفتار کو مستحکم رکھتا ہے۔ اگر کمرے کا درجہ حرارت زیادہ ہے تو کمپریسر بھی اس مطابق تیز رفتاری سے چلے گا۔ اگر درجہ حرارت گرتا ہے تو کمپریسر کی رفتار بھی سست ہوجائے گی۔

اس حیرت انگیزٹیکنالوجی کی سب سے خاص بات یہ ہے کہ یہ کبھی بھی کمپریسر کو ٹرپ نہیں ہونے دیتی، بلکہ خواہش کے مطابق ٹھنڈک کو برقرار رکھنے کے لیے اسے مناسب رفتار سے چلاتی رہتی ہے۔ اس طرح ایک عام کمپریسر اسٹارٹ ہونے کے دوران بجلی کا استعمال کم ہوجاتا ہے۔

انورٹر اے سی مہنگے ضرور ہوتے ہیں لیکن ان کی افادیت عام اے سی کی نسبت کہیں زیادہ ہے یہ اپنی قیمت کو مؤثر کولنگ کے ذریعے پورا کر دیتے ہیں۔ کم اتار چڑھاؤ کی وجہ سے بجلی بھی کم خرچ کرتے ہیں یعنی بجلی کی بچت کو یقینی بناتے ہیں۔

انورٹر اے سی بجلی کے بلوں میں 30 فی صد کمی لاتے ہیں مگر ماحول کے درجہ حرارت، کولنٹ گیس کی قسم، موٹر کی قسم اور دوسرے تکنیکی پرزوں کی بناء پر یہ شرح 50 فی صد تک بھی جا سکتی ہے۔

اس طرح یہ چیزیں انورٹر اے سی کو کم آواز، کم خرابیوں اور بجلی کے کم استعمال کے ساتھ پرانے اے سی یونٹس کے مقابلے میں زیادہ بھروسہ مند اور مؤثر بنا دیتی ہیں۔

مثال کے طور پر ایک 1.5 کلوواٹ ریٹنگ والا ایک نان انورٹر اے سی 7.0 ایمپیئرز خرچ کرتا ہے اور ایک انورٹر اے سی جو 2.6 کلوواٹ کی ریٹنگ رکھتا ہے، (0.9 سے 3.0 کلوواٹ کے درمیان کام کرتا ہے) 2.8 ایمپیئرز کھینچتا ہے۔ تو ایک نان انورٹر اے سی 8 گھنٹے چلنے پر 10 یونٹس خرچ کرتا ہے، جبکہ ایک انورٹر اے سی اتنی ہی دیر تک چلنے کے بعد صرف 4 یونٹس خرچ کرتا ہے۔

اگربجلی کی فی یونٹ کی قیمت 6 روپے مقررکی جائے تو ایک نان انورٹر اے سی ماہانہ 1,800 روپے کی بجلی خرچ کرتا ہے جبکہ ایک انورٹر اے سی اتنا ہی چلنے پر ماہانہ 720 روپے کی بجلی خرچ کرتا ہے۔ اس طرح آپ کو ماہانہ 1,080 روپے کی بچت ہوتی ہے۔

یہی وجہ ہے کہ اگر ایک انورٹر اے سی پر 1 لاکھ روپے کی لاگت آتی ہے اور اسی ریٹنگ اور کولنگ کے لیے ایک نان انورٹر اے سی پر 65,000 روپے کی لاگت آتی ہے، تو انورٹر اے سی کا خرچہ صرف تین سالوں میں ہی واپس موصول ہو جاتا ہے۔

اگر آپ یہ سوچ رہیں ہیں کہ انورٹر اے سی پرانے ماڈلز کے مقابلے میں مہنگے ہوتے ہیں، تو آپ درست بھی ہیں۔ مگر سچ یہ ہے کہ اگر آپ انورٹر اے سی کے لیے بڑی رقم خرچ کرتے ہیں تو یہ طویل مدت تک بجلی کی بچت کر کے آپ کو زائد خرچے سے محفوظ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیں11 hours agoکرپٹو کوئین کا نام دنیا کے انتہائی مطلوب ملزمان کی فہرست میں شامل

یوروپول نے دنیا کی تاریخ میں ہونے والی دھوکہ دہی کی بڑی...

13 hours agoبٹ کوائن کریش؛ وقار ذکا کی پیش گوئی درست ثابت

پاکستان میں کرپٹو کرنسی کو قانونی قرار دلوانے کے لیے پیش پیش...

16 hours agoٹوئٹر اور ایلون مسک کے درمیان ہونے والا دنیا کا سب سے بڑاکاروباری معاہدہ تعطل کا شکار!

ٹیسلا اوراسپیس ایکس جیسی کمپنیوں کے بانی ایلون مسک کا شکاردنیا کے...

24 hours agoگوگل کی جانب سے اینڈرائڈ 13 کا بیٹا ورژن متعارف

انٹرنیٹ ٹیکنالوجی کمپنی گوگل کی جانب سے موبائل فون آپریٹنگ سسٹم اینڈرائڈ...

1 day agoشدید طوفان ختم ہوتے ساحلوں کو بچا سکتے ہیں: تحقیق

ایک نئی تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ شدید طوفان گہرے...

2 days agoملکی وے میں موجود عظیم الجثہ بلیک ہول کی پہلی تصویر جاری

امریکی سائنس دانوں نے ملکی وے کہکشاں کے وسط میں موجود ’...

تازہ ترین نیوز پڑہنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کریں بول نیوزایپ

General Rectangle – 300×250

News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.