اثاثہ جات ریفرنس، اسحاق ڈار کے دائمی وارنٹ گرفتاری دوبارہ جاری

image

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کی احتساب عدالت نے مسلم لیگ نواز کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے دوبارہ دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہیں۔

احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کے آمدن سے زائد اثاثوں کے ریفرنس میں یہ احکامات جاری کیے۔

احتساب عدالت نے بدھ کو حکم سناتے ہوئے ریفرنس میں شریک ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر سماعت کو اسحاق ڈار کی گرفتاری سے مشروط کیا اور کہا کہ ’جب تک اسحاق ڈار کو گرفتار کر کے عدالت پیش نہیں کیا جاتا، ریفرنس کی کارروائی آگے نہیں بڑھے گی۔‘

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ریفرنس کی سماعت کی۔

سماعت میں نیب پراسیکیوٹر افضل قریشی اور شریک ملزمان کے وکلا عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ ’شریک ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر فیصلہ اسحاق ڈار کی گرفتاری کے بعد کیا جائے گا۔‘

’شریک ملزمان نے نیب ترمیمی آرڈیننس کے تحت ریفرنس کو دوبارہ چیلنج کر رکھا تھا۔‘

خیال رہے کہ اپنے علاج کے لندن میں مقیم مسلم لیگ نواز کے رہنما اور رکن سینیٹ اسحاق ڈار نے اس عہدے کا حلف نہیں اٹھایا۔

اسحاق ڈار نے فروری میں چیئرمین سینیٹ کا خط لکھ کر اپنے حلف کے بارے میں آگاہ کیا تھا اور درخواست کی تھی ان کا ورچوئل حلف لے لیا جائے لیکن چیئرمین سینیٹ نے ان کا ورچوئل حلف لینے سے انکار کر دیا تھا اور موقف اپنایا تھا کہ’آئین اور سینیٹ کے قواعد کے تحت منتخب رکن کو ایوان کے سامنے حلف اٹھانا ہوتا ہے۔‘


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
پاکستان کی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.