سیاست میں گئی تو ’ایک خاص نظر‘ سے دیکھا گیا: ارمیلا مٹونڈکر

image
بالی وڈ اداکارہ ارمیلا مٹونڈکر نے کہا ہے کہ جب انہوں نے سیاست میں جانے کا فیصلہ کیا تھا اس کو بہت سے لوگوں نے ’عجیب نظر‘ سے دیکھا تھا۔

خیال رہے وہ ان ان سٹارز میں سے ہیں جو سیاست میں نہ صرف گئے بلکہ باقاعدہ انتخابات میں بھی حصہ لیا۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ارمیلا نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ سیاست میں جاتے ہی ان کے بارے میں عجیب عجیب تبصرے شروع ہو گئے کہ جن کو سن کر حیرت ہوتی تھی جبکہ ایسے تبصروں کا سلسلہ اب تک بھی جاری ہے۔

ان کے مطابق ’ایسا اس لیے بھی ہوتا ہے جب آپ خاتون ہوں، خوبصورت اور گلیمرس بھی ہوں تو آپ کو ایک خاص نظر سے دیکھا جاتا ہے۔‘

ارمیلا نے خیال بھی ظاہر کیا اگر آپ ایک مرد اداکار ہیں تو ہو سکتا ہے آپ کے ساتھ ایسا نہ ہو۔

ان کا کہنا تھا کہ یہی سمجھ لیا جاتا ہے کہ اگر ایک خاتون اور وہ بھی اداکارہ سیاست میں جائے تو وہ گونگی اور سوچنے سمجھنے کی صلاحیت سے عاری ہے۔

اور ہاں سب سے بڑی بات جس سے لوگوں کو دلچسی ہوتی ہے وہ اس پر توجہ دینا ہے کہ ’وہ کیا کر رہی ہے۔‘ میرا یقین کریں اب بھی کچھ لوگ ایسا ہی سوچتے ہیں۔

ارمیلا مٹونڈکر نے یہ بھی بتایا کہ میڈیا جس انداز میں ان کی الیکشن مہم کو کور کرتا تھا وہ خود اسی کا مذاق اڑانے کے لیے کافی تھا جبکہ آج بھی حالات میں کچھ زیادہ تبدیلی نہیں آئی۔

ارمیلا مٹونڈکر نے خیال بھی ظاہر کیا اگر آپ ایک مرد اداکار ہیں تو ہو سکتا ہے آپ کے ساتھ ایسا نہ ہو۔ (فائل فوٹو: ٹوئٹر)

انہوں نے سیاست میں حصہ لینے والی دیگر خواتین کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’ان کو بھی ایسی صورت حال کا سامنا رہا تاہم مجھے زیادہ اس لیے کرنا پڑا اور میرے خیال میں اس کی وجہ یہ ہے کہ میرا تعلق شوبز سے تھا اور میں خاتون ہوں۔‘

اداکارہ نے اپنے شوہر محسن کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا انہوں نے سیاسی کیریئر کے دوران ہر قدم پر ان کو سپورٹ کیا جو کہ ان کے لیے حیران کن تھا۔

ارمیلا جلد ہی زی ٹی وی کے ریئلٹی شو ’ڈانس انڈیا ڈانس سپر مومز‘ میں بطور جج نظر آئیں گی۔

انہوں نے 2019 میں انڈین نیشنل کانگریس میں شمولیت اختیار کی تھی اور اسی سال ہی لوک سبھا کے انتخابات میں حصہ لیا تھا۔

الیکشن ہارنے کے بعد اسی سال انہوں نے کانگریس سے استعفٰی دے دیا تھا اور دسمبر 2020 میں شیو سینا کا حصہ بن گئی تھیں۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
آرٹ اور انٹرٹینمنٹ
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.