سال کے آخر تک تیل کی قیمت 65 ڈالر فی بیرل تک گرنے کا امکان

image

 امریکی ماہرین نے رواں سال کے آخری میں  تیل کی قیمت گرنے کی پیش گوئی کردی۔

امریکی مالیاتی ادارے سٹی گروپ نے خبردار کیا ہے کہ کساد بازاری کی صورت میں رواں سال کے آخر تک خام تیل کی قیمت 65 ڈالر فی بیرل تک گر سکتی ہے جبکہ 2023 کے آخر تک قیمت 45 ڈالر فی بیرل تک نیچے آنے کا امکان بھی ہے۔

بلومبرگ  کے مطابق سٹی گروپ، فرانسسکو مارٹوشیا اور ایڈ مورس نے مشترکہ رپورٹ  میں 70 کی دہائی کے بحران اور موجودہ مارکیٹ کی صورتحال کا موازنہ  کیا  ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ  اگر تیل پیدا کرنے اور برآمد کرنے والی تنظیم اور اس کے اتحادیوں کی جانب سے کوئی مداخلت نہ کی گئی یا پھر سرمایہ کاری میں کمی کی گئی تو متذکرہ صورت حال مزید بھی شدت اختیار کر سکتے ہیں۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے تاریخی شواہد بتاتے ہیں کہ صرف عالمی کساد بازاری کی صورت میں تیل کی طلب منفی ہو جاتی ہے جبکہ دیگر کساد بازاریوں میں عام طور پر ایک خاص حد تک گرتی ہیں۔

 


News Source   News Source Text

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.