یوکرین کے چار علاقے روس میں ضم، پوتن نے معاہدے پر دستخط کر لیے

image
روسی صدر ولادیمیر پوتن نے یوکرین کے چار علاقوں کو روس میں ضم کرنے کے معاہدے پر دستخط کر لیے ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق جمعے کو روس کے صدر ولادیمیر پوتن نے مغرب کو خبردار کرتے ہوئے کہا  کہ ماسکو کے زیرانتظام چار علاقوں کے لوگ ’ہمیشہ کے لیے ہمارے شہری‘ بن گئے ہیں۔

لوگانسک، ڈونسک، خیرسون اور ژاپوریژیا کو روس میں شامل کرنے کے لیے ایک تقریب منعقد کی گئی۔ تقریب میں یوکرینی علاقوں کے روسی حمایت یافتہ رہنما بھی موجود تھے۔

روسی صدر نے کہا کہ ’میں کیئف کی حکومت کو اور مغرب میں اس کے سرپرستوں کو کہنا چاہتا ہوں کہ لوگانسک، ڈونیسک، خیرسون اور ژاپوریژیا کے لوگ ہمیشہ کے لیے ہمارے شہری بن رہے ہیں۔‘

روسی صدر ولادیمیر پوتن نے یوکرین پر زور دیا کہ تمام فوجی کارروائیوں کو روک لے۔

’ہم کیئف کی حکومت سے فوری طور پر لڑائی روکنے اور دشمنیوں کے خاتمے کا مطالبہ کرتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ مذاکرات کی میز پر واپس آئیں۔‘

تقریب میں یوکرینی علاقوں کے روسی حمایت یافتہ رہنما بھی موجود تھے۔ (فوٹو: اے ایف پی)

انہوں نے کہا کہ روس سویت کو دوبارہ بحال کرنےکی کوشش نہیں کر رہا۔

’سوویت یونین اب نہیں رہی۔ ہم ماضی کو واپس نہیں لا سکتے اور روس کو اس کی اب ضرورت بھی نہیں ہے۔ ہم اس کے بنانے کی کوشش نہیں کر رہے۔‘

روسی صدر نے الزام لگایا کہ مغربی ممالک روس کو ’کالونی‘ بنانا چاہتے ہیں۔

یورپی رہنماؤں نے ایک بیان میں یوکرین کے علاقوں کے روس کے ساتھ الحاق کو غیرقانونی قرار دیا ہے۔

یورپی رہنماؤں نے کہا ہے کہ وہ روس میں یوکرین کے چار علاقوں کی شمولیت کو کبھی تسلیم نہیں کریں گے۔

لوہانسک، ڈونیسک، خیرسون اور ژاپوریژیا میں ریفرنڈم منعقد ہوا تھا۔ (فوٹو: اے ایف پی)

یورپ کے 27 رہنماؤں نے کریملن پر عالمی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کا الزام لگایا۔

لوہانسک، ڈونیسک، خیرسون اور ژاپوریژیا میں گزشتہ جمعے سے منگل تک ریفرنڈم منعقد ہوا۔

ریفرنڈم پر ماسکو کے حامی حکام کی طرف سے مہینوں تک بحث کی جاتی رہی ہے۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
عالمی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.