آ مد حقیقت

Poet: ماہم طاہر
By: Maham Tahir, Karachi

فضا میں لوگوں کا درد سنائی دیتا ہے مجھے
زمیں پہ زخمیوں کا خون دکھائی دیتا ہے مجھے

ضمیر نے جب سے ظاہری کا روپ دھار لیا ہے
خوابوں میں بہت ہی فقیرائی دیتا ہے مجھے

عجب تھا خیال ذہن محبت کی قربت کو دیکھ کر
کہ اس کا ہر بڑھتا قدم رسوائی دیتا ہے مجھے

دوسری راہ اختیار کرنے کا جو سوچا ہے
یہ جملہ راہ ماضی سے جدائی دیتا ہے مجھے

جب جب طلب سکون کی ہے دل ماہم نے
زخم قید دنیا سے رہائی دیتا ہے مجھے

Rate it:
23 Feb, 2020

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Maham Tahir
Visit 13 Other Poetries by Maham Tahir »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City