انہیں دیکھنے کی اس لئے جسارت نہیں کرتا

Poet: A. Sahil
By: Azmat Ullah Sahil, Lahore

انہیں دیکھنے کی اس لئے جسارت نہیں کرتا
کیونکہ اب اشک ، چشم کی طہارت نہیں کرتا

جب سے دیکھا ہے بچہ کوڑے سے کھانا چنتے
میں کچھ بھی کھانے سے , حقارت نہیں کرتا

ہمارا حاکم جو غریبوں کے خوں پہ نادم ہوتا
توں قاتلوں کے جتھے کی صدارت نہیں کرتا

گر میری آبلہ پائی کا کچھ خیال کرتا وہ
تو سکونِ منزل، سر منزل غارت نہیں کرتا

میں جس شخص کی شہء پہ بے موت مارا گیا
وہ تو میرے مرقد کی بھی زیارت نہیں کرتا

اسے کہنا کہ کوئی اور نیا ڈھونڈ لے گاہک
کہ ساحل اب دردوں کی تجارت نہیں کرتا

Rate it:
13 Jun, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Azmat Ullah Sahil
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City