بنجر میدان کر گئے

Poet: ارژنگ آصی
By: ارژنگ آصی, فیصل آباد

کھِلکھلاتے دِل کو بنجر میدان کر گئے
امریکی جیسے جنگ میں جاپان کر گئے

جو لوگ حاضری میں کنجوس تھے بہت
اکر وہ میرے سوگ پر! حیران کر گئے

کیسے تھے ہمسفر جو سرابوں میں چھوڑ کر
اِک قافلے کی پیاس پر احسان کر گئے

بوندوں کی اوٹ میں کُچھ غمزدہ سے لوگ
برسا کے آنکھیں! بارشیں گُنجان کر گئے

بھیانک ہیں اسقدر کہ جنگل میں ہیں ممنوع
شہروں میں ایسے کام بھی انسان کر گئے

بیٹھے رہے وہ خواب میں آ کر تمام رات
ارژنگ وہ تُجھ پر پھر سے احسان کر گئے

Rate it:
18 Apr, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: ارژنگ آصی
Visit Other Poetries by ارژنگ آصی »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City