تو ہی تو

Poet: زیدیہ عباسی
By: زیدیہ عباسی, چکلالہ راولپنڈی

تیری کہانی میں ہم نہیں
میری داستان حیات میں تو ہی تو

تیری محفل میں ہم نہیں
میرے لیے سارا جہاں تو ہی تو

تیرے وہم و گمان میں ہم نہیں
میرے شب و روز میں تو ہی تو

تیری پرچھائیوں میں ہم نہیں
میرے رگ وجان میں تو ہی تو

تیری خزان میں بھی ہم نہیں
میری بہاریں بھی تیرے دم سے

Rate it:
26 Aug, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: زیدیہ عباسی
Visit 13 Other Poetries by زیدیہ عباسی »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City