تیری ہر بات محبت میں گوارا کر کے

Poet: راحت اندوری
By: Muhammad Zubair, Chichawatni

تیری ہر بات محبت میں گوارا کر کے
دل کے بازار میں بیٹھے ہیں خسارہ کر کے

اک چنگاری نظر آئ تھی بستی میں اسے
وہ الگ ہٹ گیا آندھی کو اشارہ کر کے

میں وہ دریا ہوں کہ ہر بوند بھنور ہے جس کی
تم نے اچھا ہی کیا مجھ سے کنارہ کر کے

منتظر ہوں کہ ستاروں کی ذرا آنکھ لگے
چاند کو چھت پہ بلا لوں گا اشارہ کر کے

Rate it:
12 Jul, 2018

More Rahat Indori Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Muhammad Zubair
Visit 18 Other Poetries by Muhammad Zubair »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>