جب سے تری ہر بات میں رہنے لگے

Poet: Naveed Ahmed Shakir
By: Naveed Shakir, Faisalabad

جب سے تری ہر بات میں رہنے لگے
دشمن مرے اوقات میں رہنے لگے

یہ بات بھی ان کو گوارا کیسے ہو
ہم جو ترے دن رات میں رہنے لگے

اب ہے خدا حافظ ترے اس عشق کا
عاشق بھی اب جذبات میں رہنے لگے

کوئی قیامت سی اٹھی ہے شہر میں
کچھ لوگ اب صدمات میں رہنے لگے

مشہور تھے کل تک سخی کے نام سے
اب جانے کیوں خیرات میں رہنے لگے

 

Rate it:
11 Jun, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Naveed Shakir
Do Poetry and like poetry.. View More
Visit 45 Other Poetries by Naveed Shakir »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City