خوب ہنستے ہو ہنساتے ہو میاں

Poet: Sajid Bin Zubair
By: Sajid Bin Zubair, Bahawalnagar

خوب ہنستے ہو ہنساتے ہو میاں
دَرد ہنسی میں اُڑاتے ہو میاں

اورں کے تو بہہ جاتے ہیں روگ آنکھوں سے
تم کیسے بوجھ اِتنا اُٹھاتے ہو میاں

پُرنم آنکھ کیئے شب بھر جاگتے ہو
خوابوں سے کیونکر آخر اِتراتے ہو میاں

کچھ بولتے نہیں ہو زباں سے صاحب
گیت آنکھوں سے گُنگُناتے ہو میاں

عجب کھیل تماشے ہیں اس دنیا کے
کیوں تم بھی دل کو نہیں بہلاتے ہو میاں

جس ہیر کے رنگ میں رنگ گئے ہو
کیوں بن کے رانجھا نہیں دکھاتے ہو میاں

تلاشے دُنیا تجھ کو زمانوں میں ساجد
کیوں خاک میں خاک نہیں ہو جاتے ہو میاں

Rate it:
29 Jul, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Sajid Bin Zubair
Visit 6 Other Poetries by Sajid Bin Zubair »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City