دسمبر آہ گیا دیکھو

Poet: Raja Muhammad shakaib
By: Raja Muhammed shakaib , Rawalpindi

دسمبر آہ گیا دیکھو
کہ پھر وہی اداس شامیں
تمہارے بن جو گزارنی ہیں
وہ ٹھنڈی راتوں میں تارے گننا
تمھاری یادوں میں کھوہے رہنا
کے اب میرا یہ مشغلہ ہے
اگر جو چاہو پلٹ کے آنا
تو پھر اب دیر مت کرنا
کے سردیوں کی یہ لمبی راتیں
اب مجھ سے نہیں کٹے گیں
تمہارے بن میں نہ جی سکو گا
کے سردیوں کی یہ لمبی راتیں
میری لیے عذاب ٹھریں

Rate it:
14 Dec, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Raja Muhammed shakaib
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City