زندگی اپنی پر بھروسا نھیں ھے

Poet: عمرفاروق
By: عمرفاروق, شورکوٹ کینٹ 327گ ب

زندگی اپنی پر بھروسا نھیں ھے
چاھت ھے مجھے دھوکا نھیں ھے
ھم چھوڑ کر چلے گئے یی جھاں
کیوں کسی نے ھمیں روکا نھیں ھے
ھم تم سے ملنے ضرور آتے آج
مگر ملنے کا اب موقع نھیں ھے
جان نثار کردوں گا تم پر اپنی
یہ سب خیال میرے بےھودہ نھیں
وہ واقف ھے،میں جانے لگا ہوں
پھر بھی وہ کیوں افسردہ نھیں ھے
محبت میں ہمییشہ زلالت رکھی ھے
یہ دل بھی پاگل،کوئی توشہ نھیں ھے
"یہاں کسی کی بھی چلتی نہیں "عمر
یہ قید خانہ یھے کوئی چوکہ نھیں ھے

Rate it:
28 Jan, 2017

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: عمرفاروق
Visit Other Poetries by عمرفاروق »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City