عرضِ حال

Poet: Muhammad Faisal
By: Muhammad Faisal, Karachi

جو ہوتا ہے تم ہونے دو
دل روتا ہے سو رونے دو
تم دشتِ تمنا میں ہم کو
کھو جانے دو گم ہونے دو

تم درد سوا ہو جانے دو
تم ہم کو فنا ہو جانے دو

تم کیوں نامے تحریر کرو
تم کیوں جھوٹی تقریر کرو
اس دل کی تسلی کی خاطر
تم کیوں ناحق تدبیر کرو

تم درد سوا ہو جانے دو
تم ہم کو فنا ہو جانے دو

ہم وہ ہستی ہیں بے مایہ
جس کو ہے جہاں نے ٹھکرایا
جو سچ پوچھو تو جیون میں
ہے درد ہمارا سرمایہ

تم درد سوا ہو جانے دو
تم ہم کو فنا ہو جانے دو

Rate it:
29 Dec, 2017

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Muhammad Faisal
Visit 76 Other Poetries by Muhammad Faisal »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City