عشق میں جو خسارا ڈھونڈتے ہیں

Poet: Naveed Ahmed Shakir
By: Naveed Shakir, Faisalabad

عشق میں جو خسارا ڈھونڈتے ہیں
بھول جانے کا چارا ڈھونڈتے ہیں

آؤ مل کر دوبارا ڈھونڈتے ہیں
جان سے جو تھا پیارا ڈھونڈتے ہیں

آنکھ سورج کی طرف ہم اٹھا کر
آسماں پے ستارا ڈھونڈتے ہیں

ڈوب کے اِن حسیں نگاہوں میں
لوگ کیوں پھر کنارا ڈھونڈتے ہیں

خود جو محتاج ہے کسی اور کا
شہر میں ہم سہارا ڈھونڈتے ہیں

زندگی راس تک نہیں جن کو
موت کا کیوں اشارا ڈھونڈتے ہیں
 

Rate it:
11 Jun, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Naveed Shakir
Do Poetry and like poetry.. View More
Visit 45 Other Poetries by Naveed Shakir »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City