مطلبی یار

Poet: شفق کاظمی
By: Shafaq kazmi, Karachi

یاروں سے بچھڑتے وقت بس ایک التجا کی تھی
میری دوستی پر کبھی شک نہ کرنا
بچھڑتے ہی یاروں نے دشمنو کی صف میں کھڑے ہوکر مجھے جھوٹا کہہ دیا
دوست ابھی تو بچھڑے زمانہ بھی نہ ہوا تھا
ابھی کچھ وقت تو بیتنے دیتے
بھول گئے شفق نے تم سب کی خوشی کی خاطر ہی چھوڑا تھا
بچھڑتے وقت بھی منتیں کی تھیں اپنا خیال رکھنا
پر یہ کیا سب کے سامنے مجھے جھوٹا کہ کے
میری مخلصی پر شک کر کے
میرے منہ پر زور دار طمانچہ دے مارا
یاروں یہ اچھا نہیں کیا

Rate it:
21 Oct, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shafaq kazmi
میرا نام شفق کاظمی ہے ۔۔۔۔میں کراچی سے ہوں ۔۔۔۔آپ لوگ مجھ سے دیئے گئے لنک پر بھی رابطہ کر سکتے ہیں
https://www.facebook.com/ش-ف-ق-913954255608489/
.. View More
Visit 35 Other Poetries by Shafaq kazmi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City