میرے مولا! میری لاج رکھنا

Poet:
By: Tariq Iqbal Haavi, Lahore

سب جانتا ہے۔۔۔ تُو سب سنتا ہے
اے میرے خدا۔۔۔ تجھے سب دِکھتا ہے
تُو حاضر ہے، تُو ناظر بھی
تو ہر اِک شے پر قادر بھی
پھرتُو ہی بتاکہ تیرے بندے
بانٹیں جب بھی رِزق یا چندے
کیوں تصویر بازی کرتے ہیں؟
یہ کس کو راضی کرتے ہیں؟؟؟
میرے مولا! میری لاج رکھنا
مجھے بس اپنا محتاج رکھنا
کیونکہ
بیچارگی و مفلسی کی، زندگی سے ڈر لگتا ہے
تصویر باز کے لقمے کی،شرمندگی سے ڈر لگتا ہے

Rate it:
13 Apr, 2020

More Forgiveness Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Tariq Iqbal Haavi
میں شاعر ہوں ایک عام سا۔۔۔
www.facebook.com/tariq.iqbal.haavi
.. View More
Visit 147 Other Poetries by Tariq Iqbal Haavi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City