پھر مجھ پر غالب خیال یار ہوا

Poet: کاشف انجم
By: Kashif Anjum, shujabad (Multan)

پھر مجھ پر غالب خیالِ یار ہوا
اُس کا مسکرانا دل کے پار ہوا
بہت آرزو تھی ہمیں جس کی
اب جا کر کہیں اُس کا دیدار ہوا
میرے سامنے کھڑا وہ ہنس رہا تھا
اُسے غیر کا دیکھ کر دل بہت اشکبار ہوا
اُس نے پوچھا ہی نہیں آکر میرا حال رسمن
جس کی چاہت میںشیشہءِ چشم بے قرار ہوا
اُس کی محفل سے ہنستے ہوئے اُٹھ کر چلے آئےمگر
میری ہستی کا زرہ زرہ الم سے خاکسار ہوا
اب ممکن ہے وہ آئے بھی نہ میری میت پر
ارے انجم ہمیں جس سے بہت پیار ہوا
 

Rate it:
24 Dec, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Kashif Anjum
Visit 10 Other Poetries by Kashif Anjum »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

wah! zabrdast

By: ali, multan on Dec, 31 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City