ہر رات کرتے ہیں ستارے، مجھ سے بات نئی

Poet: Numan Ijaz - نعمان اعجاز
By: Numan Ijaz, Lahore

ہر رات کرتے ہیں ستارے، مجھ سے بات نئی
ہوتی ہے بحث اُن سے، ہر رات نئی

آنکھ سے گرتے ہیں ہر رنگ کے موتی
ہر بار کرتا ہوں خیرات نئی

ارد گرد ہیں موجود سبہی دل ٹوٹے
بنا رہا ہوں میں اک ذات نئی

کہتے ہیں عاشقی چھوڑ چل دل توڑیں
سُنو پھر آئیں گی شکایات نئی

مجھے مقدس ہیں اپنی روایات پُرانی
تم رکھو پاس اپنی روایات نئی

میرے ہم دم مل، کہ آئے ہیں موسم سُہانے
مل کہ آئیں نئے بادل، کریں برسات نئی

چھوڑ کر تجھے جا بسوں دُور کسی بستی میں
تجھ سے تھک گیا ہوں عشق، کرنی ہے شروعات نئی

جو کی ہیں وہی بہت ہیں، نعمان آخر مرنے تک
بس کر اب اور نہ کرنا، مجھ پر عنایات نئی

Rate it:
12 Oct, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Numan Ijaz
Visit 15 Other Poetries by Numan Ijaz »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City