جیسے سورج کی آنکھ بھی نم ہے

Poet: نذیر تبسمBy: نعمان علی, Islamabad

جیسے سورج کی آنکھ بھی نم ہے
آج کتنا اداس موسم ہے

اب تو میں دشمنوں کی زد میں ہوں
اب مجھے دوستوں کا کیا غم ہے

بجھ چکی ہیں شعور کی کرنیں
واقعی آج روشنی کم ہے

دل کسی کام میں نہیں لگتا
بے دلی کا عجیب عالم ہے

جتنے چہرے ہیں سارے جھوٹے ہیں
جو بھی تصویر ہے وہ مبہم ہے

شہر آباد ہو رہے ہیں نظیرؔ
گاؤں میں ہجرتوں کا موسم ہے

Rate it:
Views: 185
21 Jan, 2022