Add Poetry

اے کاش کبھی ہم تم نہ ملے ہوتے

Poet: اسد جھنڈیر By: اسد, mirpurkhas

اے کاش کبھی ہم تم نہ ملے ہوتے
اے کاش کبھی پیار نہ ہوا ہوتا

اے کاش کوئی امید نہ بندہی ہوتی ۔۔۔
اے کاش کوئی سلسلہ نہ باہم چلا ہوتا

اے کاش کبھی تم نہ یاد آئے ہوتے ۔۔۔
اے کاش کبھی دل نہ اسقدر تڑپا ہوتا

اے کاش تیری جدائی کے غم میں۔
دل خون کے آنسو نہ کبھی رویا ہوتا ۔۔۔

اے کاش زندگی یوں ہی بسر ہو جاتی ۔۔۔
اے کاش پیار کا غم نہ کبھی ملا ہوتا ۔۔۔

اے کاش تیرے عشق میں اسد ۔۔۔
در در نہ مارا یوں کبھی پھرا ہوتا ۔۔۔

Rate it:
Views: 94
29 Sep, 2022
Related Tags on Sad Poetry
Load More Tags
More Sad Poetry
Popular Poetries
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets