اسلام آباداب جادو ٹونے کی گرفت میں ہے، شہبازشریف

لندن میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران مسلم لیگ ن کے صدرشہباز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان سے آئے پارٹی رہنماؤں نے نوازشریف کی خیریت دریافت کی، آج کے اجلاس میں اہم ملکی ایشوز پر بات ہوئی

تفصیلات کے مطابق آج بروز ہفتہ لندن میں منعقدہ مسلم لیگ ن کے اہم اجلاس کے بعد ایون فیلڈ کے باہر شہباز شریف نے میڈیا بریفنگ دی ۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرعدنان نے آج میاں نوازشریف کی صحت کی صورتحال کے حوالے سے بریف کیا ہے کیا ہے ، پی ای ٹی رپورٹ کی روشنی میں ان کی بیماری کی مزید تحقیقات کی جارہی ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ آج ہمارے اجلاس میں پاکستان کے موجودہ اہم ایشوز پر بات چیت کی گئی اور چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی پر مشاورت کی گئی۔ انھوں نے کہا میں نے وزیراعظم کو خط لکھا اور تین نام بھیجے،وزیراعظم نے بھی جواب دیا اور اپنے تین نام بھیجے۔

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ ہمارے کوشش ہوگی کہ خلوص کے ساتھ ان سے گفتگو کریں اورسب سے اچھی شخصیات کی بطور چیف الیکشن کمشنر تعیناتی کے لیے اتفاق رائے پیدا کریں، کیونکہ ماضی قریب کا جو تجربہ عمران خان کے ساتھ کام کا ہے وہ مایوس کن ہے۔

نیب اور حکومت کا گٹھ جوڑ ہے، خواجہ آصفاس دوران صحافی نے سوال کیا کہ اسلام آباد کی فضاؤں میں باتیں چل رہی ہیں کہ دو ہزار بیس میں الیکشن ہوں گے اور آپ وزیراعظم بنیں گے اس پر آپ کیا کہیں گے؟۔

سوال کے جواب میں شہباز شریف نے جواب دیا کہ اسلام آباد کی فضاؤں میں بہت ساری چیزیں چلتی ہیں ان کی بات نہ کریں،اسلام آباد تو اب جادو ٹونے کی گرفت میں ہے۔

اس سے قبل لندن میں ن لیگ کے اجلاس کے بعد خواجہ آصف کا میڈیا سے گفتگو میں کہنا تھا کہ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر کے مسائل سے شہباز شریف کو آگاہ کیا ہے اور ہم نے میاں شہباز شریف سے رہنمائی بھی لی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان جاکر آئندہ لائحہ عمل وضع کریں گے لیکن ہمارا مؤقف ہے کہ نئے انتخابات سے قبل ان ہاؤس تبدیلی آئے۔

مریم نوازکا ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست سماعت کیلئے مقررانہوں نے کہا ہے کہ مین ایشو چیف الیکشن کمشنر اور اراکین کی تعیناتی ہے اور تفیصیلی فیصلہ آنے تک آرمی چیف کے مدت ملازمت پر کوئی بات نہیں کی جاسکتی ہے۔

واضح رہے کہ لندن میں میاں نواز شریف کی قیادت میں مسلم لیگ ن کے وفد کی ملاقات ہوئی ہے جس میں مختلف موضوعات پر مشاورت بھی کی گئی ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.