پی ایس ایل 6: پشاور زلمی کا ملتان سلطانز کو جیت کے لیے 167 رنز کا ہدف

پی ایس ایل کے ابو ظہبی میں کھیلے جانے والے چھٹے سیزن کے 21ویں میچ میں ملتان سلطانز نے پشاور زلمی کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کا فیصلہ کیا ہے۔

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے ابو ظہبی میں کھیلے جانے والے چھٹے سیزن کے 21ویں میچ میں ملتان سلطانز نے پشاور زلمی کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کا فیصلہ کیا۔

اب سے کچھ دیر قبل تک پشاور نے 20 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 166 رنز بنائے۔ شاہنواز دھانی نے چار وکٹیں حاصل کیں۔

میچ کا مکمل سکور کارڈ

پشاور کی اننگز کا احوال

پشاور کے اوپنرز کامران اکمل اور حیدر علی نے اننگز کا آغاز وکٹ نہ کھونے کے مقصد کے ساتھ کیا۔

کامران اکمل نے پانچ چوکوں کی مدد سے ملتان کے بولرز پر دباؤ برقرار رکھا مگر ان کا ایک آسان کیچ کپتان محمد رضوان نے کیپنگ کرتے ہوئے گِرا دیا۔

شعیب ملک کوئی بھی رن نہ بنا پائے اور دھانی کا شکار بنے۔ ڈیوڈ ملر نے 22 رنز بنائے۔

ردرفورڈ نے 56 رنز بنائے۔ فیبین ایلن تین رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔ رومان پاؤل نے بھی فقط چار رنز بنائے تپے کہ رضوان انھیں دھانی کی بال پر آؤٹ کر دیا۔

یوں پاور پلے کے اختتام پر پشاور کے اوپننگ بلے بازوں نے 50 رنز کو عبور کیا۔

مگر نویں اوور میں شاہنواز دھانی نے پانسہ پلٹ دیا جب انھوں نے ایک ہی اوور میں پہلے کامران اکمل اور پھر شعیب ملک کو دو مسلسل گیندوں پر آؤٹ کیا۔ دھانی نے اپنے اگلے اوور میں حیدر علی کو آؤٹ کر کے اپنی تیسری وکٹ حاصل کی۔


میچ سے قبل پوائنٹس ٹیبل پر پشاور آٹھ پوائنٹس کے ساتھ تیسرے جبکہ ملتان چار پوائنٹس کے ساتھ پانچویں نمبر پر ہے۔ ملتان نے شان مسعود اور لیسنگ مزربانی کو موقع دیا گیا تاہم پشاور اپنی وننگ الیون کے ساتھ میدان میں اتری۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کی لاہور قلندرز کے خلاف 28 رنز سے جیت

اس سے قبل اتوار کے پہلے میچ کے دوران اسلام آباد یونائیٹڈ نے لاہور قلندرز کو 28 رنز سے ہرا دیا ہے۔

153 رنز کے ہدف کے تعاقب میں لاہور کی ٹیم 18.2 اوور میں 126 رنز بنا کر آل آؤٹ ہوگئی۔ فخر زمان کے علاوہ کوئی بھی بلے باز کریز پر جم کر بیٹنگ نہ کر سکا۔

لاہور نے دو وکٹوں کے نقصان پر 86 رنز کے بعد محض 14 رنز کے اضافے پر سات وکٹیں گنوا دیں جس سے ان کے لیے جیتا ہوا میچ ہار میں تبدیل ہوگیا۔

اسلام آباد کے بولرز نے دباؤ برقرار رکھتے ہوئے اپنی خراب بیٹنگ پرفارمنس کا ازالہ کیا۔ محمد موسیٰ نے تین جبکہ لیگ سپنرز شاداب خان اور فواد احمد نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں۔

میچ کا مکمل سکور کارڈ

اسلام آباد یونائیٹڈ نے 20 اوورز میں سات وکٹوں کے نقصان پر 152 رنز بنائے تھے جس میں آصف علی نے 75 رنز بنا کر کلیدی کردار ادا کیا اور ان کا ساتھ افتخار احمد نے 123 رنز کی شراکت کی صورت میں دیا۔ اسی دوران جیمز فالکنر نے تین جبکہ شاہین آفریدی اور حارث رؤف نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں۔

20 رنز پر اسلام آباد کی نصف ٹیم آؤٹ

ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے اسلام آباد کا آغاز کافی بُرا تھا اور محض 20 رنز پر ان کی پانچ وکٹیں گِر چکی تھیں۔

لاہور کے اوپنگ بولر شاہین آفریدی اپنی تیسری ہی گیند پر عثمان خواجہ کو وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کر کے اسلام آباد کے پہلے نقصان کا سبب بنے۔

ان کی لیٹ آؤٹ سوئنگ نے بلے بازوں کو پریشان کیے رکھا۔ اگلی ہی گیند پر انھوں نے روحیل نذیر کو ایل بی ڈبلیو کیا مگر نو بال ہونے کی وجہ سے یہ وکٹ انھیں نہ مل سکی۔

مگر دوسرے اوور میں جیمز فالکنر نے روحیل نذیر کی یہ کمزوری بھانپ لی اور انھیں ایل بی ڈبلیو کردیا۔ کالن منرو بھی فالکنر کا شکار بنے جب ایک اندر آنے والی گیند نے انھیں ایل بی ڈبلیو کیا۔

پاور پلے ختم ہونے سے قبل حسین طلعت نے فالکنر کی گیند پر بڑی شاٹ لگانے کی کوشش کی مگر وہ سکوئر لیگ پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

حارث رؤف نے پاور پلے کے بعد اپنے پہلے اوور میں کپتان شاداب خان کو کیپر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کیا۔

یہ بھی پڑھیے

کوئٹہ اور ملتان کی آپس میں لیگ کروانی چاہیے، کوئی تو جیت ہی جائے گا

’تم آؤٹ نہ دو، ہم خود ہی کر لیں گے‘

قلندرز کی آخری گیند پر جیت: ’شروع مجبوری میں کیے تھے اب مجا آ رہا ہے‘

یوں محض 20 رنز پر اسلام آباد کی نصف ٹیم آؤٹ ہوچکی تھی۔ مگر اس کے بعد افتخار احمد اور آصف علی کی 123 رنز کی شراکت نے شاداب الیون کو سہارہ دیا۔

آصف علی نے کافی بہادری سے لاہور کے بولرز کا مقابلہ کیا اور صرف 28 گیندوں پر نصف سنچری بنائی۔ انھیں راشد خان کی گیند پر آؤٹ کرنے کا ایک موقع بین ڈنک نے گنوایا جب سٹپ کرنے کے دوران گیند ان کے ہاتھ سے نکل گئی تھی۔

آصف علی بالآخر 43 گیندوں پر پانچ چھکوں کی مدد سے 75 رنز بنانے کے بعد شاہین آفریدی کی گیند پر ہِٹ وکٹ ہوئے جبکہ افتخار احمد اپنی نصف سنچری مکمل نہ کر سکے اور انھیں حارث رؤف نے 49 رنز پر پویلین واپس بھیج دیا۔

یوں آصف اور افختار نے اپنی ٹیم کو مشکل حالات سے نکال کر 153 رنز کا ایک اچھا ہدف دینے کے قابل بنایا۔

لاہور کے اچھا آغاز کا یوٹرن

لاہور نے 153 رنز کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے اچھا آغاز کیا تھا مگر بعد میں کھیل بالکل تبدیل ہوگیا۔

لاہور کے اوپنرز فخر زمان اور کپتان سہیل اختر نے پاوور پلے میں 55 رنز بنائے۔ مگر پھر لیگ سپنر فواد احمد نے سہیل اختر کو 34 کے انفرادی سکور پر لیگ بیفور کر کے واپس بھیجا۔

اگلے ہی اوور میں تیسرے نمبر پر آنے والے بلے باز ذیشان اشرف صرف ایک رن بنانے کے بعد رن آؤٹ ہوگئے۔

فخر زمان کریز پر ڈٹے رہے تاہم محمد موسیٰ نے 11ویں اوور کی پہلی گیند پر محمد حفیظ کو پُل شاٹ کھیلنے کے دوران کیچ آؤٹ کیا جو کہ لاہور کی گِرنے والی تیسری وکٹ تھی۔ بین ڈنک بھی کریز پر زیادہ دیر نہ رہ سکے اور انھیں محمد موسیٰ نے آؤٹ کیا۔

آؤٹ ہونے والے پانچویں بلے باز فخر زمان تھے جو 44 کے سکور پر موسیٰ کے باؤنسر کو جارحانہ انداز میں کھیلنے کے بعد باؤنڈری پر کیچ دے بیٹھے۔

ٹِم ڈیوڈ اور راشد خان اسلام آباد کے کپتان شاداب خان کا شکار بنے۔ اس کے فوراً بعد شاہین آفریدی، جیمز فالکنر اور حارث رؤف کی وکٹیں بھی گِر گئیں۔

یوں 14 رنز کے اضافے کے ساتھ لاہور نے سات وکٹیں گنوائیں اور ٹیم 126 رنز پر آل آؤٹ ہو کر میچ ہار گئی۔

اس جیت کے بعد اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم پوائنٹس ٹیبل پر پہلے نمبر پر آگئی ہے۔

’جیتا ہوا میچ ہارنا کوئی لاہور قلندرز سے سیکھے‘

میچ کے آغاز میں لاہور قلندرز کی عمدہ کارکردگی نے سوشل میڈیا پر بظاہر تبصروں کی برسات کر دی تھی اور بعض صارفین اسلام آباد یونائیٹڈ کی بیٹنگ پر تنقید بھی کر رہے تھے۔

بابر خان نامی صارف ٹوئٹر پر لکھتے ہیں کہ 'لاہور قلندرز پچھلے تمام سیزن کی کرکٹ چھٹے سیزن میں کھیل رہی ہے۔ معلوم نہیں کون سا جادو کر کے آئی ہے۔ اسلام آباد کی ٹیم کو تو بکری بنا دیا۔ 20 رنز پر اسلام آباد کی آدھی ٹیم پویلین لوٹ گئی۔'

اسی طرح فہمیدہ یوسفی کے مطابق 'لاہور قلندرز رانا صاحب کے ہر آنسو کا جواب یہ پی ایس ایل جیت کر دیں گے۔'

طیب شاہ کے مطابق 'قلندرز کا جو حال پہلے چار سیزنز میں ہر ٹیم نے کیا آج وہی حال قلندرز ہر ٹیم کا کر رہی ہے۔'

ماہ نور نے اسلام آباد کی بیٹنگ کارکردگی پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ 'اسلام آباد اور اس کے مضافات میں سونے کا ٹائم ہوا چاہتا ہے۔'

لاہور قلندرز کی سپورٹر سیدہ گلوش حنا کا کہنا تھا کہ اسلام آباد کی ٹیم چاہے جلدی آؤٹ ہوجائے مگر 'ہم پوری باری لیں گے۔'

آصف علی کی برق رفتار نصف سنچری پر عاتکہ چوہدری کا کہنا تھا کہ یہ ان کی ’پوری زندگی کی بہترین اننگز‘ ہے۔

مگر میچ میں اسلام آباد کو سبقت حاصل ہونے پر صارفین بھی حیران رہ گئے۔

سلمان نامی صارف کے مطابق ’لاہور قلندرز کو اسی لیے قلندرز کہتے ہیں۔ جیتا ہوا میچ ہارنا کوئی ان (لاہور قلندرز) سے سیکھے۔‘

خیال رہے کہ اسلام آباد کے حسن علی پی ایس ایل چھوڑ کر پاکستان جا چکے ہیں۔ اسلام آباد یونائیٹڈ کے ترجمان کے مطابق وہ ذاتی وجوہات کے سبب وطن واپس گئے اور بقیہ میچوں کے لیے دستیاب نہیں ہوں گے۔

اسلام آباد نے حسن علی اور عاکف جاوید کی جگہ علی خان اور فواد احمد کو ٹیم کی حصہ بنایا جبکہ لاہور نے محمد فیضان کی جگہ ذیشان اشرف کو موقع دیا۔

سنیچر کو پی ایس ایل کے مقابلے میں پشاور زلمی نے شاندار بولنگ کی بدولت کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 61 رنز سے ہرا دیا تھا۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم 198 کے ہدف کے تعاقب میں 136 رنز بنا سکی۔

پشاور زلمی نے پہلے کھیلتے ہوئے ڈیوڈ ملر اور کامران اکمل کی ذمہ دارانہ بیٹنگ کی بدولت مقررہ 20 اوورز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 197 رنز بنائے تھے۔

جمعے کو کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے خلاف اسلام آباد یونائیٹڈ نے صرف 10 اوورز میں ہی ہدف حاصل کر کے شائقین اور کرکٹ نقادوں کو حیران کر دیا تھا۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پہلے کھیلتے ہوئے 20 اوورز میں 133 رنز بنائے تھے مگر اسلام آباد یونائیٹڈ نے یہ ہدف بغیر کسی نقصان کے حاصل کر لیا تھا۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے گزشتہ روز شکست کھانے والی ٹیم میں ایک تبدیلی کی اور آندرے رسل کی جگہ ظاہر خان کو موقع دیا۔

جبکہ جمعرات کو لاہور قلندرز نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 170 رنز بنائے جس کے جواب میں پشاور زلمی کی ٹیم صرف 160 رنز بنا سکی اور یوں لاہور کو 10 رنز سے فتح ہوئی۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.

29