آج اس نے میری امید کا آخری دیا بھی بجھا دیا

Poet: H.M. Salman Amin
By: H.M. Salman Amin,

آج اس نے میری امید کا آخری دیا بھی بجھا دیا
جو رہ گیا تھا ذلت کا طوق ھمیں وہ پہنا دیا

کیے تھے اس نے وعدےپوری زندگی ساتھ نبھانے كے
پر اس نے تو تھوڑی دور آغاز سفر پہ ہی دغا دیا

ہم تو سمجھے کے شاید کہ اسے میرے اوپر رحم آے گا
لیکن اس نے ہمارے وجودناتواں کو کانٹوں پہ ہی لیٹا دیا

مکافات عمل کے اصول سے میسر نہیں کسی کو فرار
یہی سوچ کے ہم نے اپنے دل بےقرار کو بہلا دیا

ہے ہم کو یقین ایک دیں لازم وہ پچھتانے کےبعد پلٹ آئے گا
پر ہم بھی بولیں گے ہم نے تو تمہیں پہلے ہی دفنا دیا

Rate it:
26 Mar, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: H.M. Salman Amin
Visit 13 Other Poetries by H.M. Salman Amin »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City