اب ہمیں واسطہ نہیں رکھنا

Poet: UA
By: UA, Lahore

اب ہمیں واسطہ نہیں رکھنا
تم سے کچھ رابطہ نہیں رکھنا
جو تعلق ہمارے درمیاں تھا
وہ قائم باخدا نہیں رکھنا
جب سے محرم تمہارے ساتھ رہے
تب سے ہم خود سے اجنبی ہی رہے
اپنی آنکھوں کو خوں رلالا ہے
ہم نے خود کو بہت ستایا ہے
کِس قدر روح کو تڑپایا ہے
جب سے دِل میں تمہیں بسایا ہے
اَب یہ سوچا ہے خود کو معاف کریں
دِل کو درد آشنا نہیں رکھنا
غم کوئی سابقہ نہیں رکھنا
اب ہمیں واسطہ نہیں رکھنا
تم سے کچھ رابطہ نہیں رکھنا
 

Rate it:
15 Oct, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: uzma ahmad
sb sy pehly insan phr Musalman and then Pakistani
broad minded, friendly, want living just a normal simple happy and calm life.
tmam dunia mein amn
.. View More
Visit 3064 Other Poetries by uzma ahmad »

Reviews & Comments

اپنے ساتھاپنے ہمی انصاف کریں
اَب یہ سوچا ہے خود کو معاف کریں

By: Uzma, Lahore on Oct, 22 2019

اپنی آنکھوں کو خوں رلایا ہے

By: Uzma, Lahore on Oct, 22 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City