انسان

Poet: امیر عثمان
By: Ameer usman, علی پور چھٹہ

تم ہو انسان
اچھا
ٹھیک ہے پر
تم نظر آتے ہو مجھے
امارت جیسے
آٸنیہ دیکھو ذرا
آنکھ بند کر کے
تمہیں نظر آۓ گا
مٹی کا محل
جو دن بہ دن بوسیدہ ہو رہا ہے
اور لوگ آتے ہیں مٹی ڈالتے ہیں

تمہاری خواہیش
اور تم
اڑ نے لگے ہو
جیسے دھول
اور لوگ اس کو صاف کر رہے ہیں
تم میلے ہو کیا
کیوں نظر نہیں آتے تم
ان کو ۔
تمہاری خوبصورتی اُڑ رہی ہے
کیا جسم مٹی بن گیا
تم مٹی سے بنے تھے
تم ہو انسان
اچھا
ٹھیک ہے پر
تم نظر نہیں آتے

Rate it:
13 Dec, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Ameer usman
Visit 11 Other Poetries by Ameer usman »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City