ذہانت ِعشق

Poet: حازق علی
By: Hazik Ali, Multan

عشق سے ذہین دنیا میں کوئی ہے ہی نہیں
اس کہ ساتھ کرسکتا کوئی بہ ہی نہیں

یہ تو لالچ دے دے کھا گیا جوانی کو
اور یہ بھی کہ اس میں . مَیں ہی نہیں

لگا دی لاشیں خواہشوں کی ترتیب سے
اب چاہنے کیلئے بچی کوئی شے ہی نہیں

کرید کرید دیکھتا ہے نشان بھر تو نہیں گئے
اور کہتا، مجھ سے ہٹتی کوئی تہہ ہی نہیں

حازق تو چپ کر تو ہی تو لایا تھا آخر اسکو
بَس یہی ہے دنیا میں اسکے بنا رہ ہی نہیں
 

Rate it:
28 Dec, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Hazik Ali
Visit 12 Other Poetries by Hazik Ali »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City