لہجہ

Poet: افنان وٹو
By: افنان وٹو, Lahore

تھوڑا دل دکھے گا سو معذرت
آپ ہی کے لہجے میں بات ہو گی

کچھ شکوے اور شکایتیں کچھ آپ کی عنایتیں
بے سلسلہ سی اس گفتگو میں شاید آج ہم کو بھی رات ہو گی

اہل ضمیر سے ہوں میں مجھے بے رخی سے نہ شکست دے
بے رخی نہیں حیا ہے گر تو پھر تو یہ بھی سوغات ہو گی

کبھی نہیں لوں گا منہ موڑ لوں گا شاید عشق کرنا بھی چھوڑ دوں گا
خودی کو گر میری ٹھیس پہنچی تو عشق نہیں یہ خیرات ہو گی

فاصلے ہیں بد گمانیاں ہیں کچھ مستقل پریشانیاں ہیں مگر
لاشعور میں بھی یہ گماں نہیں مجھے عشق میںں کبھی مات ہو گی

 

Rate it:
13 Mar, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: افنان وٹو
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City